اتوار , جنوری 21 2018
Home / خیبر پختونخوا / پختونخوا کے 36 ارکین پر اسمبلی کے دروازے بند

پختونخوا کے 36 ارکین پر اسمبلی کے دروازے بند

خیبرپختونخوا اسمبلی نے گوشوارے جمع نہ کرانے پر 38 اراکین اسمبلی کو معطل کردیا ہے جبکہ دو اراکین کی رکنیت گوشوارے جمع کرانے پر بحال کردی گئی ہے۔

خیبرپختونخوا اسمبلی نے الیکشن کمیشن میں گوشوارے جمع نہ کرانے پر 38 اراکین کی رکنیت معطل کردی ہے، معطل ہونے واکے اکین میں سب سے زیادہ اراکین کا تعلق حکمران جماعت سے ہے جن میں شوکت یوسف زئی اور اکبر ایوب سمیت عارف یوسف، یاسین خان خلیل، فضل الہٰی، ارباب محمود وسیم خان، خالق الرحمن، محمد ادریس، قربان علی خان، فضل الشکور خان، سلطان محمد خان، خالد خان، احمد خان بہادر، محمد زاہد درانی، افتخار علی مشوانی، عبد الکریم، محمد ریاض، امجد علی آفریدی، امتیاز شاہد، گل صاحب خان، سردار فرید احمد خان، سردار اورنگزیب نلوٹھہ، فیصل زمان ، صالح محمد، الحاج ابرار حسین، نواب زاہد ولی محمد، محمود احمدخان، فضل کریم، محمد رشاد خان، صاحبزادہ ثناء اللہ، اعزاز الملک، ملیحہ علی اصغر خان، راشدہ رفعت، معراج ہمایون خان، نگہت اورکزئی، بلدیو کمار اور فریڈرک اعظیم شامل ہیں تاہم ان اراکین میں فضل الہٰی اور نصرت بیگم کی رکنیت گوشوارے جمع کرانے کے بعد بحال کردی گئی ہے۔

گوشوارے جمع نہ کرانے والے اراکین کے ناموں کی لسٹ اسمبلی گیٹ پر تعینات سکیورٹی انتظامیہ کو فراہم کردی گئی ہے جو کہ اسمبلی اجلاس میں شرکت نہیں کرسکیں گے۔

تبصرہ کریں

Check Also

صوبے کے سبجیکٹ سپیشلسٹ اساتذہ کا بھی اپ گریڈیشن کا مطالبہ

خیبرپختونخوا کے مختلف محکمہ جات کے ملازمین کی مستقلی اور ترقی کے بعد سبجیکٹ سپیشلسٹ …