پیر , اگست 20 2018
Home / خیبر پختونخوا / کرک میں بچے کی موت پر والد کا ڈاکٹروں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

کرک میں بچے کی موت پر والد کا ڈاکٹروں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

کرک  کے ایک رہائشی نے الزام عائد کیا ہے کہ وومن اینڈ چلڈرن ہسپتال میں ڈاکٹرز کی عدم موجودگی کے باعث ان کے دوماہ  کا بچہ جاں بحق ہو گیا۔

شرقی کندہ خیل کے رہائشی اول دین کا کرک بازار میں احتجاج کرتے ہوئے کہنا تھا کہ گزشتہ شب وہ اپنے شیرخوار بچے کو وومن اینڈ چلڈرن ہسپتال لے گیا تاہم ڈاکٹرزکی عدم موجودگی کے باعث وہ کے ڈی اے ہسپتال جانے پر مجبور ہوئے۔

ان کا کہنا تھا کہ بچے کی حالت مزید بگڑتی رہی جس پر ڈاکٹروں نے خون کا مشورہ دیتے ہوئے اسے کسی دوسرے ہسپتال لے جانے کا کہا لیکن خون کا بندوبست کرنے ک بعد جب وہ وومن اینڈ چلڈرن ہسپتال واپس آئے تو عملہ تب بھی غیرحاضر تھا جس کی وجہ سے ان کے بچے کی موت واقع ہو گئی۔

اول دین کے مطابق احتجاج شروع کرنے پر پولیس نے بھی انہیں زدوکوب کیا جس کی وجہ سے وہ کرک بازار میں احتجاج کرنے پر مجبور ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ان کے بیٹے کی طرح کے کئی بچے مذکورہ ہسپتال میں سہولیات کی عدم موجودگی کے باعث انتہائی لاچارگی کی موت مرتے ہیں اس لیے متعلقہ حکام اور عدلیہ انہیں انصاف کی فراہمی یقینی بنائے۔

Check Also

غازمین حج آج رکن اعظم وقوف عرفہ آدا کرینگے

عازمین حج مسجد نمرہ سے خطبہ حج سنیں گے اورظہراورعصرکی نمازیں اکٹھی اداکرینگے۔عازمین حج غروب …

Pin It on Pinterest

Shares
Share This