جمعرات , مئی 24 2018
Home / خیبر پختونخوا / نواز شریف کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرانے کی درخواستیں مسترد

نواز شریف کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرانے کی درخواستیں مسترد

لاہور ہائیکورٹ نے پاکستان مسلم لیگ ن کے تاحیات قائد اور سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرانے کی درخواستیں مسترد کردیں۔

لاہور ہائیکورٹ کے فاضل جج جسٹس شمس محمود مرزا نے ممبئی حملوں سے متعلق بیان پر نواز شریف کے خلاف غداری کا مقدمہ دائر کرانے کے لیے تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک کی جانب سے دائر درخواستوں کی سماعت کی۔

درخواست گزاروں کا موقف تھا کہ نواز شریف کا ممبئی حملوں سے متعلق بیان جھوٹ پر مبنی ہے، جس سے کروڑوں پاکستانیوں کے جذبات مجروح ہوئے جبکہ  ایسا کرکے نواز شریف نے اپنے حلف اور ملک سے غداری کی جس پر عدالت ان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے۔

عدالت عالیہ نے فریقین کا موقف سننے کے بعد درخواستوں کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے انہیں مسترد کردیا۔

 فاضل جج نے درخواست گزاروں کو پہلے متعلقہ فورمز سے رجوع کرنے کا حکم دے دیا۔

یاد رہے کہ نواز شریف نے 12 مئی کو ڈان کے سات اپنے انٹرویو میں کہا تھا کہ عسکری تنظیمیں تاحال فعال ہیں جنہیں نان سٹیٹ ایکٹرز کہتے ہیں تو کیا انہیں سرحد  پار جانے اور ممبئی میں 150 لوگوں کو ہلاک کرنے کی اجازت دینی چاہیے۔

اس بیان کے بعد جہاں بھارت میڈیا میں ششور وغوغا بپا ہوا اور ادھر سیاستدانوں نے اس بیان کی مذمت کی تو دوسری جانب پاک فوج کی تجویز پر قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس بھی بلایا گیا۔

اجلاس میں اس بیان کو غلط اور گمراہ کن قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی گئی تاہم سابق وزیراعظم نے اس اعلامیے کو ہی افسوسناک اور تکلیف دہ قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا۔

دوسری جانب آج ن لیگ کے پارلیمانی بورڈ کااجلاس ہوا جس میں ارکان نے اپنے قائد کے بیان پر تحفظات کا اظہار کیا جنہیں نواز شریف تک پہنچانے کی شہباز شریف کی جانب سے یقین دہانی کرائی گئی۔

تبصرہ کریں

Check Also

مردان، کرکٹ میچ کے دوران فائرنگ سے دو افراد زخمی

مردان کے علاقے محب چیک پوسٹ کے قریب کرکٹ میچ کے دوران کھلاڑیوں کے درمیان …

Pin It on Pinterest

Shares
Share This