بدھ , اپریل 25 2018
Home / Uncategorized / انصاف کی فراہمی میں ہم پر ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں، جسٹس محمد غضنفر علی خان
سوات (باخبر سوات ڈاٹ کام) پشاور ہائیکورٹ مینگورہ بینچ کے سینئر جج جسٹس محمد غضنفر علی خان نے کہا ہے کہ بار اور بنچ لازم و ملزوم ہیں۔ عوام کوانصاف کی فراہمی کے لیے ہم پر بہت ساری ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں۔ جوڈیشری میں ججز اور وکلا ایک گاڑی کے دو پہیے ہیں،ان خیالات کااظہار انہوں نے ڈسٹرک بار ایسو سی ایشن سوات کی تقریب حلف برداری سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پشاور ہائی کورٹ کے جسٹس ناصر محفوظ، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سوات ظفر اقبال اور دیگربھی موجود تھے۔ سوات بار کے نومنتخب صدر اختر منیر خان، جنرل سیکرٹری عنایت اللہ خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پر جسٹس محمد غضنفر علی خان نے نومنتخب کابینہ سے حلف لیااور کہا کہ وکلا عوام کو انصاف کی فراہمی کے لئے کردار ادا کرنے کی بھر پور رہنمائی کریں۔ کیونکہ عوام کی ہم سے امیدیں وابستہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ضلع عدالتوں کوآنے والے سائلین کے مسائل بغور حل کرنے کے لیے ہمیں کردارادا کرنا ہوگا

انصاف کی فراہمی میں ہم پر ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں، جسٹس محمد غضنفر علی خان

سوات (باخبر سوات ڈاٹ کام) پشاور ہائیکورٹ مینگورہ بینچ کے سینئر جج جسٹس محمد غضنفر علی خان نے کہا ہے کہ بار اور بنچ لازم و ملزوم ہیں۔ عوام کوانصاف کی فراہمی کے لیے ہم پر بہت ساری ذمہ داریاں عائد ہوتی ہیں۔ جوڈیشری میں ججز اور وکلا ایک گاڑی کے دو پہیے ہیں،ان خیالات کااظہار انہوں نے ڈسٹرک بار ایسو سی ایشن سوات کی تقریب حلف برداری سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پشاور ہائی کورٹ کے جسٹس ناصر محفوظ، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سوات ظفر اقبال اور دیگربھی موجود تھے۔ سوات بار کے نومنتخب صدر اختر منیر خان، جنرل سیکرٹری عنایت اللہ خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پر جسٹس محمد غضنفر علی خان نے نومنتخب کابینہ سے حلف لیااور کہا کہ وکلا عوام کو انصاف کی فراہمی کے لئے کردار ادا کرنے کی بھر پور رہنمائی کریں۔ کیونکہ عوام کی ہم سے امیدیں وابستہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ضلع عدالتوں کوآنے والے سائلین کے مسائل بغور حل کرنے کے لیے ہمیں کردارادا کرنا ہوگا

تبصرہ کریں

Check Also

پی ٹی ایم کے مطالبات جائز قرار، مذاکرات کیلئے اپیکس کمیٹی تشکیل

پاک فوج کا کہنا ہے کہ پشتون تحفظ موقومنٹ کے مطالبات جائز ہیں جبکہ تحریک …

Pin It on Pinterest

Shares
Share This