جمعرات , اپریل 26 2018
Home / بلوچستان / عام انتخابات سے قبل فاٹا کو صوبے میں ضم کیا جائے۔ مولانا سمیع الحق کا مطالبہ

عام انتخابات سے قبل فاٹا کو صوبے میں ضم کیا جائے۔ مولانا سمیع الحق کا مطالبہ

جمیعت علماء اسلام س کے امیر مولانا سمیع الحق نے فاٹا کو آئندہ عام انتخابات سے قبل صوبے میں ضم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ یہ مطالبہ انہوں نے پردہ باغ پشاور میں جے یو آئی س کی جانب سے طلب کیے گئے جرگے کے موقع پر کیا۔

فاٹا انضمام کے حق میں منعقدہ اس جرگہ میں جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مشتاق احمد خان، عوامی نیشنل پارٹی کے میاں افتخار حسین، تحریک انصاف کے شاہ فرمان اور خیبرایجنسی سے منتخب رکن قومی اسمبلی الحاج شاہ جی گل کے علاوہ قبائلی عمائدین اور طلبہ کی بھی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

جرگہ سے اپنے خطاب میں مولانا سمیع الحق نے کہا کہ فاٹا کے عوام کو عرصہ دراز سے اپنے بنیادی انسانی حقوق سے محروم رکھا گیا تاہم اب وقت آگیا ہے کہ ملک کے دیگر شہریوں کی طرح کے حقوق فاٹا کے عوام کو بھی دیے جائیں۔

قبائلی جرگے سے خطاب کرتے ہوئے مشتاق احمد خان نے کہا کہ فاٹا کے 95 ٖیصد عوام صوبے میں انضمام چاہتے ہیں اور یہ بات سرتاج عزیز کمیٹی کی سفارشات میں سامنے آئی ہے۔

اے این پی کے جنرل سیکرٹری نیاں افتخار حسین نے اس موقع پر کہا کہ مرکزی حکومت اور بیشتر سیاسی جماعتیں فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کرنا چاہتی ہیں تو پھر حیرانگی کی بات یہ ہے کہ آخر اس عمل کی راہ میں رکاوٹیں کون ڈال رہا ہے؟

انہوں نے مزید کہا کہ فاٹا انضمام مضبوط و مستحکم پاکستان کے حق میں ہے۔

اس موقع پر اپنے خطاب میں الحاج شاہ جی گل نے کہا کہ قبائلیوں نے ملک کے لیے بڑی قربانیاں دی ہیں اور اب مہینوں نہیں بلکہ دنوں میں فاٹا اصلاحات پر عملدرآمد کیا جائے گا۔

تبصرہ کریں

Check Also

مذاکرات کے دوسرے دور کیلئے پی ٹی ایم نے دو دن کی مہلت لے لی

پشتون تحفظ موومنٹ اور حکومت کے مابین مذاکرات کا پہلا دور اختتام پذیر ہو گیا …

Pin It on Pinterest

Shares
Share This