پیر , جولائی 23 2018
Home / خیبر پختونخوا / خیبر پختونخواہ میں کئی زبانیں معدوم ہونے کا خطرہ

خیبر پختونخواہ میں کئی زبانیں معدوم ہونے کا خطرہ

خیبرپختونخوا میں کئی زبانیں ایسی ہیں جن کے معدوم ہونے کا خطرہ ہے۔ زبانوں کے ماہرین ان علاقائی زبانوں کے بچاو ٔکے لئےابتدائی تعلیم مادری زبان میں دینے پر زور دیتے ہیں ۔

خیبرپختونخوا مختلف قومیتوں کا گلدستہ ہے۔ یہاں 26 کے قریب مختلف زبانیں بولی جاتی ہیں۔ تاہم اقوام متحدہ کے’ ورلڈ لینگویجز ان ڈنجر‘ رپورٹ کے مطابق ان میں سے 15 کے قریب زبانوں کے معدوم ہونے کا خطرہ لاحق ہے۔ ان زبانوں میں 8 چترال میں بولی جاتی ہیں۔زبانوں کے ماہرین کے مطابق زبان کے معدوم ہونے سے نہ صرف وہ زبان مرتی ہے بلکہ اس زبان کے بولنے والوں کی ثقافت، روایات، موسیقی اور تاریخ بھی دم توڑ دیتی ہے۔ حکومت ان زبانوں کو معدوم ہونے سے بچانے کے لئے نا صرف ان کا قاعدہ مرتب کرے بلکہ مادری زبان میں تعلیم کے انتظامات بھی کرے۔علاقائی زبانوں کی ترقی کے لئے اے این پی حکومت کی جانب سے 2012 میں خیبرپختونخوا پروموشن آف ریجنل لنگویجز ایکٹ پاس کیا گیا ۔تاہم اس حوالے سے باقاعدہ اتھارٹی کا قیام اب تک ممکن نہیں ہوسکا۔ یہ بھی پڑہھیے: ملک میں780 زبانیں بولی جاتی ہیں،بھارت کا نیا دعویٰ

تبصرہ کریں

Check Also

این اے 49، ایک انار کے 28 بیمار

سٹیزن جرنلسٹ رضیہ محسود سے این اے 49 جنوبی وزیرستان سے 28 امیدوار میدان میں …

Pin It on Pinterest

Shares
Share This